Press "Enter" to skip to content

Posts published in December 2018

کراچی کےقریب گہرے سمندر میں تیل و گیس کی تلاش، سپلائی جہاز پہنچ گئے

کراچی کے قریب گہرے سمندر میں تیل و گیس کی تلاش کی تیاریاں شروع کردی گئی ہیں اور اس سلسلے میں بڑے اسٹیشن ‘مدرآف آل رگز’ کو آلات کی سپلائی کے لیے جہاز کراچی پورٹ ٹرسٹ (کے پی ٹی) پہنچ گئے۔

وفاقی وزیر برائے بحری امور علی حیدر زیدی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بتایا کہ ‘کراچی کے ساحل سے 230 کلومیٹر دور واقع بڑے اسٹیشن ‘مدرآف آل رگز’ کو آلات پہنچانے کے لیے جہاز کے پی ٹی پہنچ چکے  ہیں’۔

علی زیدی نے مزید لکھا کہ ‘تیل کی تلاش کے لیے ایگزون موبل اور ای این آئی کا خیر مقدم کرتے ہیں’۔

ساتھ ہی انہوں نے امید ظاہر کی کہ ‘عالمی پیمانے پر تیل و گیس کی تلاش کے لیے دعاگو ہیں، انشاء اللہ بڑی خبر ملے گی’۔

واضح رہے کہ امریکی آئل اینڈ گیس کمپنی ایگزون موبل 27نے  سال بعد پاکستان میں دوبارہ کاروبار شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

گذشتہ ماہ ایگزون موبل کی ایل این جی مارکیٹ ڈیویلپمنٹ کی چیئرپرسن ایما کوکرین نے اپنے وفد کے ہمراہ اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی اور کمپنی کے کاروباری منصوبے سے آگاہ کیا۔

اس موقع پر ایگزون موبل کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ ‘پاکستان میں آزادانہ اور محفوظ سرمایہ کاری کی مکمل معاونت کریں گے’۔

Please follow and like us:

سندھ میں گورنر راج کے حوالے سے میرے پاس کوئی اطلاع نہیں، عمران اسماعیل

سکھر: گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ ان کے پاس صوبے میں گورنر راج لگنے کے حوالے سے کوئی اطلاع نہیں۔

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما خواجہ اظہارالحسن  آج گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات کے لیے سکھر میں سرکٹ ہاؤس پہنچے۔

اس موقع پر عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ میرے پاس ایسی کوئی اطلاع نہیں کہ سندھ میں گورنر راج لگ رہا ہے۔

عمران اسماعیل نے کہا کہ کراچی میں کچھ افسوسناک واقعات ہوئے ہیں، جن پر قابو پالیا جائے گا جبکہ حالیہ ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں کچھ گرفتاریاں بھی ہوئی ہیں۔

گورنر سندھ نے مزید کہا کہ عوامی نمائندے جو مینڈیٹ لے کر آئے ہیں، اسے پورا کریں۔

 واضح رہے کہ گذشتہ روز حکومت نے جعلی اکاؤنٹس/ منی لانڈرنگ کیس کے سلسلے میں جے آئی ٹی رپورٹ کی بنیاد پر ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں شامل کیے جانے والے 172 افراد کے ناموں کی فہرست جاری کی تھی، جن میں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا نام 155 ویں نمبر پر ہے۔

منی لانڈرنگ سے متعلق جے آئی ٹی رپورٹ میں نام آنے پر سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور پی ٹی آئی رہنما فردوس شمیم نقوی نے وزیراعلیٰ سندھ کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ مراد علی شاہ اپنی اخلاقی بنیاد کھو چکے ہیں۔

فردوس شمیم نقوی کا مزید کہنا تھا کہ صوبے میں گورنر راج کی گنجائش بھی موجود ہے۔

دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان نے گذشتہ روز کہا تھا کہ وزیراعلیٰ سندھ کے استعفے کا مطالبہ صرف ای سی ایل میں نام آنے پر نہیں کیا، مراد علی شاہ بہت سارے معاملے کے پیچھے ہیں، ہر محکمے میں اربوں نہیں کھربوں روپےکی کرپشن ہوئی ہے، ہم 5 سال تک انتظار نہیں کرسکتے اور ہر فورم پر ان کے خلاف آواز اٹھائیں گے۔

Please follow and like us:

میرا امتحان شروع ہو چکا ہے، جس کا نتیجہ ریٹائرمنٹ پر نکلے گا: چیف جسٹس

لاہور: چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے پیشہ ورانہ زندگی میں خلوص نیت سے کام کرنے کو اصل خدمت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا امتحان شروع ہوچکا ہے، جس کا نتیجہ ان کی ریٹائرمنٹ پر نکلے گا۔

لاہور میں سروسز انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کی کانووکیشن تقریب سے خطاب میں چیف جسٹس نے کہا کہ ‘میں نے اپنی پوری زندگی انصاف کے حصول کے لیے کام کیا ہے، میری زندگی کا مقصد ہمیشہ اپنے پیشے سے مخلص رہنا ہے’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘پیشہ ورانہ زندگی میں خلوص نیت سے ذمہ داری نبھانا ہی اصل خدمت ہے، میرا امتحان شروع ہوچکا ہے، جس کا نتیجہ میری ریٹائرمنٹ پر نکلے گا’۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ‘زندگی بامقصد ہونی چاہیے، کیڑے مکوڑے کی طرح بےمقصد نہیں’۔

‘طب کا شعبہ سب سے زیادہ ذمہ دار’

جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ ‘ہر شخص کو زندہ رہنے کا حق ہے اور طب کا شعبہ سب سے زیادہ ذمہ دار ہے، لہذا ڈاکٹر حضرات کو چاہیے کہ اپنے حلف کی صحیح پاسداری کریں’۔

ساتھ ہی چیف جسٹس نے واضح کیا کہ ‘اسپتالوں کو چلانا میرا یا عدالتوں کا کام نہیں تھا لیکن وہاں پر غلطیاں ہو رہی تھیں، اداروں کی غلطیوں کا سدباب کرنا عدلیہ کی قانونی ذمہ داری ہے’۔

اس موقع پر چیف جسٹس نے ماضی کی یادوں کو کھنگالتے ہوئے بتایا کہ ‘میں 8 برس کی عمر میں اپنی والدہ کو تانگے پر بٹھا کر ڈاکٹر کے پاس لےکر جاتا تھا اور کئی کئی گھنٹے تک ڈاکٹروں کے پاس جا کر بیٹھا رہتا تھا’۔

انہوں نے بتایا کہ ‘والدہ نے مجھے اور میرے بھائی کو انسانیت کی خدمت کی نصیحت کی اور دعا کی اے اللہ! جو تکلیفیں تھیں تونے مجھے دے دیں، میری اولاد کو محفوظ رکھنا’۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ‘جو شخص کسی عذاب سے گزرتا ہے، اسے دوسرے کی تکلیفوں کا احساس ہوتا ہے، میں نے بھی والدہ کی نصیحت کو پلے سے باندھ کر اپنی زندگی کا مشن شروع کیا’۔

انہوں نے کہا کہ ‘صحت کے شعبے میں خیبرپختونخوا میں جو کرنا چاہ رہا تھا، نہیں کرسکا لیکن پنجاب اور سندھ میں صحت کے شعبوں میں تبدیلیاں آئی ہیں’۔

جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ ‘نجی اسپتال تعلیم گاہیں نہیں، بزنس سینٹر بن چکے ہیں’، ساتھ ہی انہوں نے واضح کیا کہ ‘وہ تمام نجی اسپتالوں کی نہیں، مخصوص اداروں کی بات کر رہے ہیں’۔

انہوں نے مزید کہا کہ ‘مجھے ملک کے ہر کالج، ہر اسپتال کے ساتھ محبت ہے، میری محبت یکطرفہ نہیں، دوطرفہ ہے’۔

چیف جسٹس نے بتایا کہ انہوں نے نجی میڈیکل کالجوں کی لاکھوں روپے فیس میں سے 726 ملین روپے بچوں کو واپس دلوائے۔

اپنے خطاب کے دوران چیف جسٹس نے تعلیم کی اہمیت اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ ‘کسی بھی قوم یا معاشرے کی ترقی وخوشحالی کے لیے تعلیم بنیادی درجہ رکھتی ہے اور میری ہمیشہ سےکوشش رہی کہ تعلیم کے فروغ کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری کروں’۔

 جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ ‘میں ہمیشہ اس بات پر زور دیتا ہوں کہ ہمیں اپنے وسائل کو تعلیم پر لگانا چاہیے’۔

کانووکیشن سے خطاب کے دوران چیف جسٹس کا مزید کہنا تھا کہ ‘ملک کی آبادی بڑھ رہی ہے اور وسائل کم ہوتے جا رہے ہیں، آج پاکستان میں پیدا ہونے والا ہر بچہ ایک لاکھ، 21 ہزار روپے کا مقروض ہے’۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس نے گذشتہ ماہ مانچسٹر میں ایک تقریب سے خطاب کے دوران آبادی پر کنٹرول کے لیے ‘2 بچے ہی اچھے’ مہم شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔

چیف جسٹس نے کہا تھا کہ ‘میں اس کی شروعات اپنے گھر سے کروں گا اور اپنے بچوں کو بھی اس کی تلقین کروں گا’۔

خطاب کے دوران چیف جسٹس نے سوال کیا کہ ‘کیا پانی کی کمیابی کے معاملے پر بات کرنا غلط ہے؟ کیا صاف پانی کے مسئلے پر ازخود نوٹس لینا میرے دائرہ اختیار میں نہیں آتا؟’

آخر میں چیف جسٹس نے کہا کہ ‘پانی سے لےکر ادویات کی حد تک ہمیں کوشش کرنا ہوگی کہ بہتری لائیں’۔

Please follow and like us:

امریکی شہر نیویارک کی ایک سڑک قائداعظم محمد علی جناح کے نام سے منسوب

نیویارک: امریکی شہر نیویارک کے علاقے بروکلین میں واقع کونی آئی لینڈ ایونیو کی ایک سڑک بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے نام سے منسوب کردی گئی۔

 کونی آئی لینڈ ایونیو کی سڑک کو بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کے نام سے منسوب کرنے کی قرارداد 26 دسمبر کو نیویارک کونسل میں منظور ہوئی۔

یہ قرارداد نیویارک کونسل بروکلین کے ممبر جمانے ولیمز نے پیش کی تھی، جسے بھاری اکثریت سے منظور کرلیا گیا۔ اس موقع پر جمانے نے کہا، ‘ہم کونسل کے فیصلے سے خوش ہیں، یہ پاکستانی-امریکن کمیونیٹی کے ساتھ ساتھ پاکستانیوں کے لیے بھی ایک تحفہ ہے’۔

سڑک کو بانی پاکستان کے نام سے منسوب کیے جانے کا اعلان پاکستانی-امریکن یوتھ آرگنائزیشن کے صدر واکل احمد نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا۔

واکل احمد نے اس موقع پر کونی آئی لینڈ کو ’لٹل پاکستان‘ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کی تنظیم کے اراکین نے کونی آئی لینڈ کی سرکاری طور پر پہچان کروانے کے لیے طویل عرصے تک کام کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘ہم بے حد خوش ہیں کہ ہماری محنت رنگ لے آئی’۔

 واضح رہے کہ ’محمد علی جناح وے‘ کا باقاعدہ افتتاح آئندہ ماہ کیا جائے گا۔

Please follow and like us:

سونے کی فی تولہ قیمت68ہزار روپے تک جا پہنچی

کراچی : سونے کی فی تولہ قیمت میں800روپے بڑھ گئی ہے جس کے باعث ایک تولہ سونا68ہزار روپے ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق عالمی مارکیٹ میں فی اونس ڈالر کی قیمت میں اضافے کے باعث مقامی صرافہ بازاروں میں سونے کی قیمتیں ایک بار پھر بلند ترین سطح پر پہنچ گئیں۔

سندھ صرافہ ایسوسی ایشن کے مطابق عالمی مارکیٹ میں سونے کی1280ڈالر فی اونس ہوگئی ہے، جس کے اثرات پاکستان کی مارکیٹ میں بھی دیکھے گئے ہیں۔

پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت میں800روپے بڑھ گئی ہے جس کے باعث ایک تولہ سونا68ہزار روپے کا ہوگیا ہے۔ علاوہ ازیں سونے کی 10 گرام قیمت 687 روپے اضافے کے بعد58ہزار 300روپے ہوگئی ہے۔

Please follow and like us:

CM KP inspects border fencing process at Torkham

PESHAWAR: Chief Minister Khyber Pakhtunkhwa Mahmood Khan on Friday visited Pak-Afghan Border at Torkham and inspected the border fencing process.

Expressing his satisfaction over border fencing process, CM KP said government is paying its heed to the matters related to the security in the country.

He said the provincial government is paying special attention to the promotion of tourism, industries and other sectors across the province.

Mahmood Khan said seventeen economic zones in different parts of the province will be established to boost trade and economic activities.

Border Management System

Pakistan border authorities enforced the border management system at Torkham point under which nobody being permitted to enter Pakistan via the border crossing without having legal passport and valid visa from 1st June,2016.

Security on border was tightened with deployment of additional contingents of the border forces to curb the illegal entry of foreign nationals into Pakistan territory.

The officials said that the border initiative is the part of national action plan aiming to protect border which will be in the favor of long-lasting peace in both countries.

The move comes as Pakistan tries to secure the border with Afghanistan known as the Durand Line. The border is notorious for the unhindered crossing of people from both sides without proper travel papers. It is estimated that more than 10,000 people cross the border daily without any check.

Please follow and like us:

بھارت نے غیر ملکی صحافی کو کشمیر میں داخل ہونے سے روک دیا

سری نگر : بھارتی فورسز  نےکشمیر میں جاری بھارتی مظالم کی پردہ پوشی کے لیے غیر ملکی صحافی کو مقبوضہ وادی میں داخل ہونے سے روک دیا۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فورسز نے ریاستی دہشت گردی جاری رکھتے ہوئے مقبوضہ وادی میں صحافیوں کے داخلے پر بھی پابندی عائد کردی۔

کشمیر میڈیا سروس کا کہنا ہے کہ غیر ملکی فوٹو جرنلسٹ کیتھل میگ نوتن کشمیر کے عوام سے ملنا چاہتے تھے لیکن بھارت کشمیری عوام پر جاری بھارتی ظلم و بربریت کی پردہ پوشی کےلیے قانون کی خلاف ورزی کا بہانہ بناکر غیر ملکی صحافی کو مقبوضہ وادی میں جانے سے روک دیا۔

یاد رہے کہ آج قابض بھارتی فورسز نے مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلواما میں نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران اندھا دھند فائرنگ کرکے کشمیری نوجوان کو شہید کردیا تھا۔

میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ اشفاق احمد وانی نے ایم بی اے کی ڈگری حاصل کر رکھی تھی، نوجوان کی شہادت کے بعد پلواما، ضلع اسلام آباد میں بھارتی بربریت کے خلاف شدید مظاہرے شروع ہوگئے۔

کشمیری میڈیا کا کہنا ہے کہ ظالم بھارتی فوج کی جانب سے کشمیری نوجوان کی شہادت کے بعد علاقے میں غیراعلانیہ کرفیو نافذ کردیا گیا ہے، جبکہ انٹرنیٹ اور موبائل فون سروس بھی بند کردی گئی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ کشمیری رہنما میرحفیظ اللہ بھارتی قید سے آزاد ہو کرپہنچے تھے اورانہیں مسلسل نامعلوم نمبرز سے دھمکی آمیز کالز موصول ہو رہی تھیں۔

کشمیری میڈیا کے مطابق 20 نومبر کو میرحفیظ اللہ کو ان کے گھر میں گھس کر فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج آزادی کی آواز کو دبانے کے لیے مختلف ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے اور اب تک ہزاروں کشمیری شہید اور زخمی ہوچکے ہیں۔

Please follow and like us:

بھارت میں تین طلاق یکمشت دینے پرپابندی کا بل منظور

نئی دہلی: بھارتی اسمبلی نے مسلم خواتین کی شادی سے متعلق حقوق کے تحفظ کا بل 2017منظور کرلیا ہے، بل کے تحت یک مشت تین طلاقیں نہیں دی جاسکتیں۔

تفصیلات کے مطابق بی جے پی نے ایوانِ زیریں (لوک سبھا) میں اپنی اکثریت کے سبب طلاقِ ثلاثہ ( تین طلاق یکمشت ) پر پابندی کا بل منظور کرلیا ہے، تاہم سینیٹ ( راجیہ سبھا) سے اسے منظور کرانے میں دیگر پارٹیوں کی مدد درکار ہوگی۔ اس موقع پر اپوزیشن نے ایوان سے واک آؤٹ بھی کیا۔

اس موقع پر مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ او رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے بل سے متعلق پانچ ترامیم پیش کیں، جو خارج کردی گئیں۔ اپوزیشن لیڈر ملکا ارجن نے تین طلاق بل کی مخالفت کی اور کہا کہ اس پر15 دنوں کے اندرر پور ٹ طلب کی جائے۔مرکزی وزیرقانون روی شنکرپرساد نے کہا کہ یہ بل ووٹ بینک کے لئے نہیں ۔ یہ مسئلہ قوم کو نشانہ بنانے کے لئے نہیں، 22 اسلامی ممالک نے تین طلاق پرقانون بنایا پھر بھارت جیسے سیکولرملک میں یہ قانون کیوں نہیں بننا چاہئے۔

بھارتی پارلیمنٹ میں کہا گیا طلاق ثلاثہ پردنیا کے 20 ممالک میں پابندی عائد کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایف آئی آرکا غلط استعمال نہ ہو، اس لئے اس میں ترمیم کی گئی۔ مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اورممبرپارلیمنٹ اسد الدین نے کہا کہ حکومت کے قانون اورجبرودباؤ سے ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے، ہم اپنے مذہب پرعمل کریں گے اوررہتی دنیا تک اسلام پرعمل کرتے رہیں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ مسلم خواتین سے محبت نہیں ہے، بلکہ ان کا مقصد انہیں جیل بھیجنا ہے۔ کمیونسٹ ممبرپارلیمنٹ محمد سلیم نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی لیڈراب قرآن وحدیث کی بات کرتے ہیں۔

Please follow and like us:

افغانستان میں امن معاہدے کے بعد مخالفین کو عام معافی دی جائیگی: طالبان

کابل: افغان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ افغانستان کے شہریوں کو یقین دلاتے ہیں کہ طالبان کی آمد کے بعد ملک میں امن واپس آئے گا اور مخالفین کو عام معافی دی جائے گی۔

غیرملکی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ اگر افغانستان میں امن اور طالبان واپس آتے ہیں تو ان کی آمد 1996 کی طرح نہیں ہوگی۔

طالبان ترجمان نے کہا کہ ہم افغان عوام کو یقین دلاتے ہیں کہ طالبان کی جانب سے انہیں کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں ہوگا، ہماری مخالفت صرف غیرملکی افواج کی وجہ سے ہے، ایک مرتبہ غیرملکی افواج کا انخلا اور امن معاہدے پر دستخط ہوجائیں پھر ملکی سطح پر لوگوں کو عام معافی دی جائے گی۔

ذبیح اللہ مجاہد کا مزید کہنا تھا کہ ہماری طرف سے کوئی بھی چاہے اس کا تعلق پولیس، فوج، حکومت یا کسی بھی شعبے سے ہو، اسے ہماری طرف سے انتقام کا نشانہ نہیں بنایا جائے گا۔

طالبان ترجمان کا بیان اس موقع پر سامنے آیا ہے کہ جب افغان امن عمل کے لیے امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد اور طالبان رہنماؤں کے درمیان حالیہ تین ماہ کے دوران مذاکرات کے کئی دور ہوچکے ہیں۔

دوسری جانب افغان ہیومن رائٹس کمیشن کے ترجمان بلال صدیقی کا کہنا ہے کہ ان کے خیال میں اب تک طالبان کا ذہن تبدیل نہیں ہوا، انہیں اس بات کا احساس ہونا چاہیے کہ انسانی حقوق کے احترام کے بغیر عالمی برادری انہیں تسلیم نہیں کرے گی۔

یاد رہے کہ امریکی فوج کی جانب سے 21 دسمبر کو افغانستان سے فوجیوں کے انخلا کا اعلان کیا گیا تھا، اور امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ ابتدائی طور پر تقریباً 7 ہزار فوجیوں کو واپس امریکا بلایا جائے گا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی شام اور افغانستان سے فوج کے انخلا کے بارے میں بیانات دے چکے ہیں، انہوں نے کرسمس کے موقع پر عراق کے اچانک دورے پر وہاں موجود امریکی فوجیوں سے ملاقات کی اور کہا کہ امریکا اب دنیا کے لیے مزید ‘پولیس مین’ نہیں بن سکتا۔

Please follow and like us:

پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار طاقتور مافیا پر ہاتھ ڈالا جا رہا ہے: گورنر سندھ

کراچی: گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار طاقتور مافیا پر ہاتھ ڈالا جا رہا ہے۔

ایک ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ میری آج وزیراعظم عمران خان سے تفصیلی ملاقات ہوئی ہے اور میں نے انہیں منی لانڈرنگ اور جعلی اکاؤنٹس کیس کے معاملے پر بریفنگ بھی دی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار طاقتور مافیا پر ہاتھ ڈالا جا رہا ہے، میں قانونی راستہ اختیار کروں گا اور جو پارٹی کہے گی وہ کروں گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ چاہ رہے ہیں کہ کرپشن کے شہید کی بجائے سیاسی شہید بن جائیں، لیکن ہماری حکومت کی کرپشن پر زیرو ٹالرینس ہے، جب یہ کرپشن کر رہے تھے تب انہیں ان معاملات کے بارے میں سوچنا چاہیے تھا۔

Please follow and like us: