Press "Enter" to skip to content

گورنر ہاؤس میں کافی کے کپ پر زلفی بخاری کے ساتھ کیا بات ہوئی؟وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے زلفی بخاری سے متعلق بڑا دعویٰ کر دیا

سلام آباد (تازہ ترین۔06 دسمبر2018ء) وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا کا نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بڑا انکشاف، کہتے ہیں وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانی زلفی بخاری چیف جسٹس کے کہنے پر برطانوی شہریت چھوڑنے کو تیار ہیں۔فیصل واوڈا نے مزید کہا کہ میری زلفی بخاری کے ساتھ گورنر ہاؤس میں کافی کے کپ پر ملاقات ہوئی اور انہوں نے مجھے کہا کہ چیف جسٹس ثاقب نثار اگر مجھے دوہری شہریت چھوڑنے کا کہیں گے تو میں برطانیہ کی شہریت چھوڑ دوں گا۔
فیصل واوڈا نے کہا کہ زلفی بخاری پر صرف اس لیے تنقید کی جاتی ہے کہ وہ عمران خان کے قریب ہیں اور نوجوان ہیں۔انہوں نے کہا کیا زلفی بخاری کامیاب نوجوان ہیں اور ملک کے لیے کچھ کرنا چاہتے ہیں۔

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ہم چیف جسٹس کی دل سے عزت کرتے ہیں کیونکہ وہ محب وطن پاکستانی ہیں۔واضح رہے بدھ کو چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی تو زلفی بخاری کے وکیل اعتزاز احسن نے پیش ہوکرموقف اپنایاکہ ہم نے جواب جمع کرادیا ہے،ان کا موکل وزیر اعظم کا معاون خصوصی ہے، پارلیمنٹرین وزیر یا مشیر نہیں،اس لئے ان پر دوہری شہریت کی ممانعت کا اطلاق نہیں ہوتا۔

Please follow and like us:

Be First to Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *