Press "Enter" to skip to content

وزیر اعظم اپنے صوابدیدی اختیارات کے تحت کسی کو بھی اپنا معاون مقرر کر سکتے ہیں

اسلام آباد (14 دسمبر2018ء) وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان کی طرف سے قومی اسمبلی کو بتایا گیا ہے کہ زلفی بخاری بیرون ملک رہتے ہیں‘ اس لئے وہ تارکین وطن کے معاملات کو بہتر سمجھتے ہیں‘ وزیر اعظم اپنے صوابدیدی اختیارات کے تحت کسی کو بھی اپنا معاون مقرر کر سکتے ہیں۔ جمعہ کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران مرتضیٰ جاوید عباسی کے سوال کے جواب میں وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے بتایا کہ پاکستان زرعی تحقیقاتی کونسل میں رکن مالیاتی سید تراب حیدر اپنی ہی تنخواہ پر ہی اپنے سکیل میں تعینات ہوئے ہیں۔
وزیراعظم کی صوابدید ہوتی ہے کہ وہ کسی کو بھی معاون کے طور پر تعینات کر سکتے ہیں اور یہ قابلیت کی بنیاد پر تعیناتی ہوتی ہے۔

وزیراعظم نے اپنے کسی دوست کو نہیں لگایا۔ زلفی بخاری بیرون ملک رہتے ہیں وہ ان تارکین وطن کے معاملات کو بہتر سمجھتے ہیں۔ کسی کو ذاتی بنیادوں پر ٹارگٹ نہیں کرنا چاہیے۔ محسن شاہنواز رانجھا نے کہا کہ اسسٹنٹ و ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی تعیناتیاں کی گئی ہیں ان کا مطلوبہ تجریہ و اہلیت نہیں ہے۔

سی ڈی اے میں جو لیگل ایڈوائزر لگائے گئے ہیں انہوں نے کچھ عرصہ قبل ایک موٹر سائیکل سوار فیملی کو تھپڑ رسید کیا اور سپریم کورٹ نے اس کا ازخود نوٹس لیا تھا۔ علی محمد خان نے کہا کہ اگر کسی کا تجربہ پورا نہیں ہے تو ان کے بارے میں تفصیلات بتا دیں اس کا جائزہ لیں گے۔ جو بھی مطلوبہ معیار پورا نہیں کرتا اس کا نوٹس لیں گے۔

Please follow and like us:

Comments are closed.