Press "Enter" to skip to content

نیتن یاہو کا اسرائیل میں قبل از وقت انتخابات کرانے کا اعلان

تل ابیب: اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے ملک میں قبل از وقت انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔

ایک ماہ قبل نیتن یاہو حکومت کے ایک اہم اتحادی نے استعفیٰ دے دیا تھا جس کے باعث اسرائیلی حکومت کمزور ہو گئی تھی۔

نومبر میں اودگور لبرمین نے اسرائیلی وزیر دفاع کے عہدے سے استعفیٰ دیکر 120 رکنی پارلیمنٹ میں حکومتی اتحاد کی برتری کو ایک نشست پر پہنچا دیا تھا یعنی حکومتی اتحاد کے اراکین کی تعداد 61 ہو گئی تھی۔

اسرائیلی حکومت کو انتہائی قدامت پسند عقائد کے حامل یہودیوں کو فوج میں شامل کرنے کا متنازع قانون پاس کرنے کے لیے اکثریت حاصل نہیں تھی جس کی وجہ سے حکومتی اتحاد نے پارلیمنٹ کو تحلیل کرنے کا فیصلہ کیا۔

اس کے علاوہ اسرائیل کے سب سے زیادہ مدت تک وزیراعظم رہنے والے نیتن یاہو کے خلاف تین کرپشن کیسز پر بھی حکومتی اتحاد پر سوالات اٹھائے جا رہے تھے۔

نیتن یاہو کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ قبل از وقت انتخابات اپریل 2019 میں ہوں گے اور امید ہے کہ موجودہ حکمران اتحاد آئندہ انتخابات میں بھی کامیابی حاصل کرئے گا۔

Please follow and like us:

Comments are closed.