Press "Enter" to skip to content

انسٹاگرام کا زبردست فیچر متعارف

تفصیلات کے مطابق فیس بک کی زیرملکیت فوٹو شیئرنگ ویب سائٹ انسٹاگرام صارفین کو متاثر کرنے کے لیے نت نئے فیچرز متعارف کراتی ہے تاکہ انٹرنیٹ کی دنیا میں راج کو برقرار رکھ سکے۔

انسٹاگرام نے گزشتہ تین ماہ کے دوران اپنے پلیٹ فارم کو بہتر بنانے اور صارفین کو صحت مند تفریح فراہم کرنے کےلیے مختلف اقدامات کیے اور فیچرز متعارف بھی کروائے۔

ٹویٹر کی طرح انسٹاگرام پر بھی فالورز کی تعداد کو اہمیت حاصل ہے اس لیے ماضی میں لوگوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر مشہوری کے لیے جعلی فالوورز خریدے بھی تھے تاکہ وہ اپنی آئی ڈی کو آفیشل کرواکے بلیوٹک کا اعزاز حاصل کرسکیں۔

انسٹاگرام صارفین کا خوف ختم، نیا فیچر متعارف

انسٹاگرام نے ایسے تمام اکاؤنٹس کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کیا اور نشاندہی کے بعد انہیں بند کردیا بعد ازاں کمپنی کی جانب سے ایک نیا فیچر ’کلوز فرینڈ‘ کے نام سے متعارف کرایا گیا۔

اس فیچر کا تعلق شیئرہونے والی اسٹوریز سے تھا جنہیں تمام فالوورز دیکھ سکتے تھے مگر کمپنی نے صارف کو اختیار دیا کہ وہ جس دوست کو بھی اپنی اسٹوری دکھانا چاہیے اُس کی فہرست مرتب کرلے تاکہ ذاتی چیزیں کوئی دوسرا نہ دیکھ سکے۔

اب سے کچھ دیر قبل انسٹاگرام نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر صارفین کے لیے زبردست اعلان کیا اور ایسا فیچر متعارف کرادیا جس کے بارے میں کوئی شنید نہیں تھی یعنی یہ سہولت صارفین کے لیے بڑا سرپرائز ہے۔

یہ بھی پڑھیں: انسٹاگرام کا جعلی آئی ڈیز کے خلاف کریک ڈاؤن شروع

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر کمپنی کی جانب سے شیئر ہونے والی اطلاعات کے مطابق انسٹاگرام نے وائس میسج کا فیچر متعارف کرایا جس کو گروپ چیٹنگ کے دوران بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

صارفین کو یہ بھی سہولت دی گئی ہے کہ وہ اگر چاہیں تو اپنے میسج کو حذف بھی کرسکیں گے جس کے لیے انہیں اپنے آڈیو پر کلک کرنا ہوگا اور پھر سامنے ڈیلیٹ یا ٹریش کا آپشن آجائے گا۔ انسٹاگرام کا یہ فیچر موبائل استعمال کرنے والے صارفین استعمال کرسکتے ہیں۔

طریقہ استعمال

چیٹ کی ونڈو میں جائیں اور وہاں موجود مائیک کو دبا کر رکھیں جس کے بعد آڈیو ریکارڈ ہونا شروع ہوجائے گی اور پھر آپ سے جیسی چھوڑیں گے خود ہی دوست کو سینڈ ہوجائے گی، اگر آپ نے دوست کے دیکھنے سے پہلے وائس میسج ڈیلیٹ کردیا تو پھر یہ اُسے بھی نظر نہیں آئے گا۔

Please follow and like us:

Be First to Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *